Harnai: BLA claims the responsibility of attacking Frontier Corps, Levies Force and Coal Mines


Baloch Liberation Army fighters targeted Pakistani forces and their supporters in three separate attacks in Harnai.

BLA fighters stormed a Levies Force post at Chappar Lat in Harnai area and seized the post, the weapons and ammunition were seized, while the Levies personnel abandoned the post. 

In another attack in Zard Aloo area last night, fighters targeted a Pakistani force, Frontier Corps post with rockets and other weapons, causing casualties and financial losses to the forces.

Meanwhile, BLA fighters in a separate attack targeted the coal mine of a government-backed person, setting fire to the mine's machinery and destroying a vehicle, while detaining two persons present at the mine.

The BLA has made it clear that we try our best not to target the Levies Force, but will not hesitate to attack the Levies Force if it becomes an obstacle to Baloch activists and the national movement.

Coal mine owners in the Zard Aloo, Shahrag and surrounding areas of Harnai, along with the Pakistani army and intelligence agencies, are becoming an obstacle to Baloch fighters, including the looting of Baloch resources. After the interrogation of the arrested persons, their release or punishment will be decided. If the coal mine owners do not stop supporting the Pakistani army and intelligence agencies, they will be targeted intensely in the future.

Baloch Liberation Army Spokesman - Jeeyand Baloch

ہرنائی: فرنٹیئڑ کور، لیویز فورس اور کوئلہ کان پر حملوں کی ذمہ داری قبول کرتے ہیں – بی ایل اے

بلوچ لبریشن آرمی کے سرمچاروں نے ہرنائی میں تین مختلف حملوں میں پاکستانی فورسز اور ان کے حمایت یافتہ افراد کو نشانہ بنایا۔

بی ایل اے سرمچاروں نے ہرنائی کے علاقے میں چھپر لٹ کے مقام پر لیویز فورس کے ایک پوسٹ پر حملہ کرکے لیویز پوسٹ پر قبضہ کرلیا جبکہ وہاں موجود ہتھیار اور بارودی مواد کو اپنے قبضے میں لےلیا گیا، حملے سے لیویز اہلکار پوسٹ چھوڑ کر بھاگ گئے۔
 
گذشتہ رات زرد آلو کے علاقے میں ایک اور حملے میں سرمچاروں نے پاکستانی فورس فرنٹیئر کور کے ایک پوسٹ کو اسی علاقے میں راکٹوں اور دیگر ہتھیاروں سے نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں فورسز کو جانی اور مالی نقصان اٹھانا پڑا۔

جبکہ اسی اثناء سرمچاروں نے ایک الگ حملے میں سرکاری حمایت یافتہ شخص کے کوئلہ کان کو نشانہ بنایا، حملے میں کان کے مشینری کو جلادیا گیا اور گاڑی کو تباہ کیا گیا جبکہ وہاں موجود دو افراد کو حراست میں لیا گیا۔

بی ایل اے واضح کرچکی ہے کہ ہماری حتی الوسع کوشش ہوتی ہے کہ لیویز فورس کو نشانہ نہیں بنایا جائے لیکن بلوچ سرمچاروں اور قومی تحریک کے سامنے رکاوٹ بننے پر لیویز فورس پر حملوں سے دریغ نہیں کیا جائے گا۔ 

ہرنائی کے علاقے زرد آلو، شاہرگ اور گردنواح میں پاکستانی فوج اور خفیہ اداروں کے ساتھ مل کر کوئلہ کان مالکان بلوچ وسائل کی لوٹ مار سمیت بلوچ سرمچاروں کے سامنے رکاوٹ بنتے جارہے ہیں۔ گرفتار کیئے گئے افراد سے تفتیش کے بعد ان کے رہائی یا سزا کا فیصلہ کیا جائے گا۔ کوئلہ کان مالکان پاکستانی فوج اور خفیہ اداروں کی حمایت سے باز نہیں آئے تو انہیں مستقبل میں مزید شدت کے ساتھ نشانہ بنایا جائے گا۔

ترجمان بلوچ لبریشن آرمی – جیئند بلوچ

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل