کراچی اسٹاک ایکسچینج پر حملہ، بی ایل اے نے ذمہ داری قبول کرلی


کراچی : بلوچ سرمچاروں نے اپنے ایک فدائی آپریشن میں کراچی اسٹاک ایکسچین پر حملہ کرکے عمارت اور علاقے کا کنٹرول سنبھال لیا ہے۔ یہ حملہ بلوچ سرمچاروں کے دشمن کے معاشی اور اہم مفادات پر جوابی حملوں کے تسلسل کا حصہ ہیں جس میں قبل ازیں چینی سفارتخانہ اور گوادر میں پرل کانٹینیٹل ہوٹل پر فدائی حملے کیے گئے تھے۔
اس حملے کے حوالے سے کراچی پولیس نے دعوی کیا ہے کہ متعدد مسلح افراد ہلاک ہوچکے ہیں اور حملہ جاری ہے۔حملہ آوروں نے مرکزی دروازے پر دستی بم پھینکے اور افراتفری کا ماحول پیدا کرنے کے بعد عمارت میں داخل ہوئے۔
ابھی تک معلوم نہیں کہ اس حملے میں کتنے فدائین نے حصہ لیا ہے تاہم بلوچ لبریشن آرمی نے سماجی رابطے کی ویب سائیٹ پر مختصر بیان میں حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’ مجید بریگیڈ نے آج کراچی اسٹاک ایکسچینج پر فدائی حملہ کیا ہے۔‘‘
بیان میں کہا گیا ہے : ہمارے جنگجو عمارت کے اندر موجود ہیں اور علاقے کا کنٹرول سنبھال چکے ہیں۔
واضح رہے کہ یہ ابتدائی اطلاعات ہیں ، مزید تفصیلات آنے کے بعد اس خبر کی جزیات میں تبدیلی ہوسکتی ہے
-

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل