Posts

Showing posts from March, 2020

“مجھے ایک دن مار دیا جائے گا، لیکن میرے بعد کوئی اور آئے گا”

Image
“مجھے ایک دن مار دیا جائے گا، لیکن میرے بعد کوئی اور آئے گا”


آج سے نو سال پہلے ایک متحرک اور ذہین نوجوان نے نیوز لائن میگزین کو تین بلوچ رہنماوں غلام محمد بلوچ، شیر محمد بلوچ اور لالا منیر بلوچ کے شہادت کے دن انٹرویو دیتے ہوئے کہا تھا کہ ” میں جانتا ہوں بلوچستان میں حقیقی سیاست کرنے کا انجام کیا ہوتا ہے، ایک دن مجھے مار دیا جائے گا، لیکن میری موت مجھے دور نہیں کرے گی، میرے بعد کوئی اور آئے گا اور اس طرح آزادی کیلئے ہماری یہ جدوجہد جاری رہے گی۔” اس پچیس سالہ نوجوان نے اپنا تعارف زاہد کرد بلوچ کے نام سے کی تھی اور وہ اس وقت بلوچستان کے ایک بڑے طلباء تنظیم بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن آزاد کے سیکریٹری جنرل تھے اور کراچی یونیورسٹی میں سیاسیات کے شعبے میں تعلیم حاصل کررہے تھے۔ وہی زاہد بلوچ آگے جاکر بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن آزاد کے چیئرمین بنتے ہیں۔ اگر آپ بلوچستان کے بارے میں معلومات کیلئے پاکستانی میڈیا یا سرکاری بیانیئے تک اکتفاء کرتے ہیں تو پھر شاید آپ یہ سمجھیں کہ بی ایس او آزاد پنجاب کے طلباء تنظیموں کی طرح یونیورسٹیوں میں غنڈہ گردی کرنے والا کوئی چھوٹا موٹا تنظیم ہے یا پھر اگر آپ …