پاکستان آرمی محاز پر بلوچ جہد کاروں کا مقابلہ نہیں کرسکتی: براہمداغ بگٹی


کوئٹہ بلوچ آزادی پسند رہنما اور بلوچ ریپبلکن پارٹی کے سربراہ نواب براہمدغ بگٹی نے نصیر آباد اور ڈیرہ بگٹی سے پاکستانی افواج کے ہاتھوں خواتین اور بچوں کے اغوا کے حوالے سے کہا ہے کہ اب یہ بات بلکل واضح ہوچکی ہے کہ پاکستان کی آرمی محاز پر موجود بلوچ جہد کاروں کا مقابلہ نہیں کر سکتی اور خواتین کو اٹھانا ریاستی فورسز کی بد ترین شکست کی نشانی ہے انھونے مزید کہا کہ پاکستانی افواج صرف اور صرف نہتے خواتین اور بچوں کو ہی اغوا کر سکتے ہیں اور ان کی قابلیت یہی تک محدود ہے۔ انھونے نے مزید لکھا کہ پاکستانی میڈیا اور انسانی حقوق کے اداروں کی خواتین کے اغوا پر مسلسل خاموشی ہمارے موقف کی تائید کرتا ہے کہ وہ آرمی کے سامنے بی بس ہے اور ان سے سوال نہیں کر سکتے، نواب براہمدغ بگٹی نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں عالمی برادری سے اپیل کی کہ وہ بلوچ خواتین کے رہائی کیلئے اپنا کردار ادا کریں آن کا کہنا تھا کہ بلوچ خواتین کو ٹارچر سیلوں میں بند کر کے انھہیں تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے یاد رہے کہ گزشتہ چار دنوں جاری آپریشن میں پاکستانی افواج نے نصیر آباد اور ڈیرہ بگٹی سے قریب دو سو افراد جو حراست میں لیا ہے جن میں زیادہ تر خواتین اور بچے ہیں۔

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل