ڈیرہ بگٹی اور متصل علاقوں سے فوج نے خواتین سمیت 200افراد کو حراست کے بعد لاپتہ کردیا



 نصیر آباد کی تحصیل چھتر کے علاقوں لاغر، بھشک، کھڈانی جبکہ ڈیرہ بگٹی کے تحصیل سوئی کے علاقوں اُوچ، موزوہی، جروار، شاری دربار میں جاری پاکستانی افواج کی خونی آپریشن میں تنازہ ترین اطلاعت کے مطابق 100 سے زائد خاندانوں پر مشتمل 200 افراد کو ریاستی فورسز نے اٹھا کر سوئی چھاؤنی اور نصیر آباد میں قائم ایف سی کیمپ منعتقل کردیا ہے زرائع کے مطابق مزکورہ علاقوں میں مقیم تمام کے تمام افراد کو ریاستی فورسز نے فوجی ٹرکوں میں ڈال کر فوجی چھاؤنیوں اور کیمپوں میں منعتقل کیا جارہا ہے زرائع کا کہنا ہے کہ اغوا شدگان میں 70 سے شائد خواتین جبکہ 50 بجے بھی شامل ہیں آج آپریشن کے دوران فورسز نے ہیلی کاپٹروں سے شدید بمباری بھی کی  چونکہ تمام علاقے ریاستی فوج کے گھیرے میں ہیں جس کے وجہ سےتاحال کوئی نقصانات کے اطلاعات  نہیں ہے آمدہ اطلاعت کے مطابق سکیورٹی فورسز نے موامی مالدار کے آٹھ سو سے زائد بھیڑ بکریوں اور دیگر میوشی بھی اپنے ساتھ لے گئے ہیں

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل