کوئٹہ : بولان میں فورسز ہاتھوں لاپتہ کئے گئے افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ






کوئٹہ   بلوچ ہیومن رائٹس کے زیر اہتمام بولان کے علاقے سے لوگوں کو  اٹھائے جانے کے خلاف اتوار کے روز کوئٹہ پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ  کیا گیا جس میں خواتین اور بچوں نے شرکت کی۔ مظاہرین نے پلے کارڈز اٹھارکھے  تھے جن پر مختلف نعرے تحریر تھے ۔ مظاہرے کی قیادت حورین بلوچ نے کی اس  موقع پر ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ دنوں بولان میں فورسز نے کارروائی کرکے  کئی افراد کو اٹھالیا جنہیں تاحال نہیں چھوڑا گیا جسکی وجہ سے ان کے اہل  خانہ میں پریشانی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ مظاہرے کے شرکاء کا کہنا تھا کہ  کارروائی کے دوران چادر اور چار دیواری کے تقدس کو بھی پامال کیا گیا۔  معصوم اور بے گناہ لوگوں کو اٹھا کر لے جانا زیادتی ہے لہذا ان تمام  افرادکو بازیاب کیا جائے شرکاء نے اس موقع پر مذکورہ افراد کی بازیابی  کیلئے نعرے بازی بھی کی بعد ازاں احتجاج ختم کردیا۔

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل