ماما سکندر کو خراج عقیدت پیش، آخری سانس تک بلوچ قومی جہد سے منسلک رہے ،بی این ایم

کوئٹہ بلوچ نیشنل موومنٹ کے مرکزی ترجمان نے کہنہ مشق سیاستدان و قوم پرست  ماما سکندر بلوچ کی وفات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ماما سکندر  بلوچ نے اپنی پوری زندگی بلوچ قوم کی خدمت و قومی آزادی کی جد وجہد میں صرف  کی ۔ ان کی موت پر ہمیں نہایت افسوس ہے اور ہم سوگواراں کے غم میں برابر  شریک ہیں۔ اللہ تعالیٰ اُنہیں جنت الفردوس میں جگہ عطا فرمائے۔ بی این ایم  اُن کی جہد کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے اور انہیں خراج عقیدت پیش کرتا ہے۔  ترجمان نے کہا کہ ماما سکندر بلوچ ستر کی دہائی سے لیکر آخری عمر تک  بیماری کی حالت میں بھی بلوچ قوم و بلوچ قومی جد و جہد سے منسلک رہے۔ ستر  کی دہائی میں ذوالفقار بھٹو کی دور حکومت میں انہیں مختلف قلی کیمپوں میں  انسانیت سوز سزائیں دی گئیں ، مگر اپنی موقف سے پیچھے نہیں ہٹے۔ اس صدی کے  آغاز میں قومی جد وجہد میں بھی وہ پیران سالی اور بیماری کے باوجود آزادی  پسندوں کی جلسوں، تقریبات، سیمینار، ریلی یا پریس کانفرنسوں میں ہرجگہ سب  سے پہلے حاضر ہو کر اپنی قوم دوستی کا ثبوت دیتے تھے۔ اور قوم پرست تنظیموں  کے ساتھ ہر قسم کی مدد و تعاون میں وہ سب سے پہلے اپنی خدمات پیش کرتے  تھے۔ ساتھ ہی ہر پروگرام میں وہ اپنی فیملی ممبران کے ساتھ حاضر ہوکر اپنے  خاندان کو بھی بلوچ قوم پرستی کی جانب مائل کرنے کی کوشش میں تھے۔اُن کی  وفات سے بلوچ قوم ایک مہربان، مہمان نواز اور ایک نفیس شخص سے محروم ہو گیا  ہے۔

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل