قلات اور کوہٹہ سے چار مسخ شدہ لاشیں برآمد


کوہٹہ  بلوچستان کے مختلف علاقوں سے مزید چار مسخ شدہ لاشیں بر آمد۔تفصیلات کے مطابق کوئٹہ کے بولان میڈیکل

کالج میں دو افراد کی مسخ شدہ لاشیں لائی گئی ہے جو شکل سے بلوچ معلوم ہوتے ہیں جنہیں سیکورٹی فورسزکے اہلکاروں نے قتل کر کے نعشیں بی ایم سی انتظامیہ کے حوالے کر دیئے ہیں۔

مقتولین کی شناخت تاحال نہیں ہوسکی ہےجبکہ انتظامیہ نے لاشوں کو ایدھی فاؤڈیشن کے حوالے کردئیے ہیں تاکہ انہیں دفنایا جا سکے۔

ایک اور واقعہ  قلات کے علاقے دلبند میں پیش آیا ہے جہاں دو لوگوں کی گولیوں سے چھلنی نعشیں برآمد کی گئی ہیں جن کے چہرے مکمل طور پر مسخ اور نا قابل شناخت ہیں۔خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ یہ تمام لاشیں ان بلوچوں کی ہوسکتی ہیں جنہیں پاکستانی افواج  نےمختلف علاقوں سے اغواء کرکے لاپتہ کیا تھا۔

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل