دشت گوران میں قمبر خان کے بیٹے کا ریاستی پشت پناہی میں لوگوں پر حملہ

دشت  منگل کے روزدشتِ گوران میں زہری اور مینگل قبیلے کے درمیان  فائرنگ کاتبادلہ ہوا جس میں دونوں طرف سے جدید اسلحہ استعمال ہوا لیکن کسی  جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملا۔نامہ ناگار کے مطابق واقعہ اس وقت پیش آیا  جبریاستی اہم کارندہ اور سردار اختر مینگل کے دست راست قمبر خان کے بڑے  بیٹے پسند خان اپنے ساتھیوں سمیت 3سرف گاڑیوں پرجو مازہریو کے ایک چھوٹے سے  گاؤں موسیٰ خانزئی پر حملہ آور ہوا اور فائرنگ کی۔جواب میں زہری قبائل کے  مسلح افراد نے پسند خان اور ان کے ساتھیوں کو چاروں طرف سے گھیرلیااور  بھرپور فائرنگ کا سلسلہ شروع ہوالیکن اسی دوران ایف سی دشتِ گوران پہنچ گئی  اور پسند خان کو گھیرے سے نکالنے میں کامیاب ہو گئی۔واضح رہے کہ قمبر خان  اس وقت مکمل پاکستانی فوجی سرپرستی میں بلوچ جہد آزادی کے خلاف سرگرم عمل  ہے۔

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل