کردگاپ میں4نوجوانوں کی گرفتاری کیخلاف ،خواتین و بچوں کا احتجاج ، کوئٹہ تفتان شاہراہ بلاک





کوئٹہ کردگاپ میں چار نوجوانوں کی فورسز کے ہاتھوں حراست بعد گمشدگی کیخلاف  خواتین و بچوں کا احتجاج،آرسی ڈی شاہراہ بلاک،کوئٹہ ٹو تفتان شاہراہ پر  ٹریفک معطل۔تفصیلات کے مطابق گردگاپ میں چار بلوچ نوجوان فٹبالروں کی فارسز  کے ہاتھوں حراست بعد گمشدگی کیخلاف خواتین بچے سراپا احتجاج بن گئے  ۔مظاہرین نے آرسی شاہراہ بلاک کرکے دھرنا دیدیا۔خواتین و بچوں کی احتجاج سے  کوئٹہ ٹو تفتان شاہراہ پر ٹریفک معطل ہوگئی تمام گاڑیاں کھڑی ہوگئیں۔واضع  رہے کہ کردگاپ کلی سرگڑھ سے گذشتہ دنوں 4دسمبر کو ایف سی اور خفیہ اداروں  نے ایک فٹبال گراؤنڈ میں تمام افراد کو یرغمال بناکرشعیب سرپرہ ولدمیر غلام  ربانی سرپرہ ،مشتاق ولد ٹکری سیف اللہ سرپرہ،ابو بکر ولد،حاجی محمد بخش  سرپرہ اور غلام رسول ولد مولابخش نامی چارفٹبالروں کو حراست میں  لیکرنامعلوم مقام پر منتقل کردیا۔ جن کا تاحال کسی قسم کی کوئی خبر نہیں  ہے۔

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل