لاپتہ  بلوچ اسیران وشہداء کے بھوک ہڑتالی کیمپ کو2515 دن ہو گئے

 

کوئٹہ  لاپتہ بلوچ اسیران وشہداء کے بھوک ہڑتالی کیمپ کو2515 دن ہو  گئے اظہار یکجہتی کرنے والوں میں تمپ سے واحد بلوچ، سفیر بلوچ اپنے ساتھیوں  سمیت لاپتہ افراد وشہداء کے لواحقین سے اظہار یکجہتی کی اور انہوں نے کہا  کہ انسان جہاں کا واحدذہن اور باشعور جانور ہے جو غلط ور صحیح کا ادراک  کرسکتا ہے مگر افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ یہی با شعور انسان اپنے مقصد  اور مفادات کی خاطر اپنے جیسے انسانوں کو روند کر تے ہیں ان کا استحصال کر  تے ہیں قتل کرتے ہیں وائس فار بلوچ مسنگ پرسنز کے وائس چیئرمین ماما قدیر  بلوچ نے وفد سے کہا کہ غلام قوموں میں احساس اور شعور کو دبایا جا تا ہے  انسان اس وقت تک عمل کی طرف نہیں جا تا تب تک وہ مضبوط نہیں ہو تا ہے  جسمانی مضبوطی سے کام نہیں چلے گا مضبوط ارادے ہی اصل طاقت ہے جب ارادے  مضبوط ہونگے و دنیا کی کوئی طاقت حتیٰ کہ موت بھی اسے اپنے مقصد سے پیچھے  نہیں ہٹا سکتا مضبوط ارادے اس وقت پید اہو تا ہے جب علم وشعور تربیت کے  ساتھ جنون پیدا ہو تا ہے اور جذبہ شامل ہو پھر لہو کو دیکھ کر ضمیر جاگ  اٹھتی ہے نفرت بڑھ جا تی ہے اپنی غلامی کی ساری رکاوٹیں توڑ کر آزاد بن جا  تا ہے آزادی کے مضبوط ارادوں کو کمزور کرنا مشکل نہیں نا ممکن بن جا تی ہے۔ 

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل