ترکی  ویمن میں کارروائیاں،تین سیکورٹی اہلکار،30جنگجوہلاک

انقرہ/صنعا ترکی کے مشرقی صوبے وان میں جنگجووں نے علاقائی محافظوں کی ایک گاڑی  پر فائرنگ کر کے 3سکیورٹی اہلکاروں اور ایک شہری کو ہلاک کر دیا ، واقع میں  2 افراد زخمی بھی ہوئے ۔ حکومت نے اس حملے کا الزام کردستان ورکرز پارٹی  پر عائد کیا ہے،غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق حکام نے بتایا کہ ترکی کے  مشرقی صوبے وان میں جنگجووں نے علاقائی محافظوں کی ایک گاڑی پر فائرنگ کر  کے 3سکیورٹی اہلکاروں اور ایک شہری کو ہلاک کر دیا ، واقع میں 2 افراد زخمی  بھی ہوئے ۔ حکومت نے اس حملے کا الزام کردستان ورکرز پارٹی پر عائد کیا  ہے، یہاں یہ امر اہم ہے کہ کردستان ورکرز پارٹی اور انقرہ حکومت کے مابین  جنگ بندی کا ایک معاہدہ گزشتہ برس ناکام ہو گیا تھا جس کے بعد سے ریاستی  فورسز اور کرد ملیشیاوں کے مابین جھڑپیں ہوتی رہتی ہیں۔دریں اثناترک حکومت  نے بھی کرد سیاستدانوں کے خلاف کارروائیاں تیز تر کر دی ہیں۔یمنی صدر منصور  ہادی کی حامی فورسز نے یمن کے جنوبی حصے میں ایک حملے کے دوران مشتبہ طور  پر القاعدہ سے تعلق رکھنے والے 30جنگجووں کو ہلاک کر دیا ۔ اس کارروائی کے  دوران 4یمنی فوجی بھی ہلاک ہوئے،غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یمنی فوج  کی طرف سے اپنے سوشل میڈیا پر بتایا گیا کہ یمنی صدر منصور ہادی کی حامی  فورسز نے یمن کے جنوبی حصے میں ایک حملے کے دوران مشتبہ طور پر القاعدہ سے  تعلق رکھنے والے 30جنگجووں کو ہلاک کر دیا ،یمنی فوج کی طرف سے اپنے سوشل  میڈیا پر بتایا گیا کہ اس کارروائی کے دوران 4یمنی فوجی بھی ہلاک ہوئے ،  آپریشن گزشتہ روز صوبہ حضرالموت کے شہر موکالا کے قریب کیا گیا۔

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل