بھارت: فیکٹری میں آتشزدگی سے 13 افراد ہلاک


نئی  دہلی ہندوستان کے دارالحکومت نئی دہلی کے قریب ایک غیر قانونی  گارمنٹ فیکٹری میں آتشزدگی سے 13 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔خبر رساں  ادارے اے ایف پی نے پولیس کے حوالے سے بتایا کہ نئی دہلی کے مضافات میں  ایک رہائشی عمارت میں قائم کی گئی ایک چمڑے کی فیکٹری میں ملازمین سو رہے  تھے کہ شارٹ سرکٹ کے باعث آگ بھڑک اٹھی۔مقامی پولیس کے ترجمان بھگوت سنگھ  نے اے ایف پی کو بتایا، 'آگ جمعہ (11 نومبر) کی صبح ساڑھے 4 بجے صاحب آباد  کے رہائشی علاقے میں واقع ایک فیکٹری میں لگی'۔انھوں نے مزید بتایا کہ آگ  لگنے کے باعث فیکٹری میں سوئے ہوئے 13 افراد جھلس کر ہلاک ہوگئے جبکہ دیگر  زخمی افراد کو طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کردیا گیا۔مقامی فائر آفیسر  عباس حسین نے اے ایف پی کو بتایا کہ 2 افراد کو ریسکیو کرلیا گیا جو آگ  لگتے ہی فوراً نیند سے جاگ گئے تھے۔عباس حسین نے بتایا، '2 افراد اتفاق سے  جاگ گئے اور انھوں نے دوسرے لوگوں کو چیخ کر جگانے کی کوشش کی اور ساتھ ہی  بالکونی کی طرف بھاگے لیکن باقی لوگ نیند سے نہیں جاگ سکے، شاید بہت دیر  ہوچکی تھی'۔انھوں نے بتایا کہ فیکٹری تقریباً غیر قانونی تھی۔عباس حسین کا  کہنا تھا، 'ہمیں جو کچھ نظر آرہا ہے، اس کے مطابق فیکٹری یقینی طور پر  قانونی نہیں تھی تاہم اس حوالے سے حتمی بات مناسب تحقیقات کے بعد ہی کی  جاسکے گی'۔ہندوستان میں اکثر و بیشتر فیکٹریوں اور چھوٹی صنعتوں میں  آتشزدگی کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں۔گذشتہ ماہ ہندوستان کی جنوبی ریاست  تامل ناڈو میں ایک پٹاخے بنانے والی فیکٹری میں خوفناک آتشزدگی سے 8 افراد  ہلاک ہوگئے تھے جبکہ اس سے قبل مئی 2014 میں بھی ایک پٹاخے بنانے والی  فیکٹری میں آگ لگنے سے 15 افراد ہلاک ہوئے تھے۔نومبر 2013 میں بھی نئی دہلی  میں ایک چمڑے کے بیگ بنانے والی فیکٹری میں آگ بھڑک اٹھی تھی، جس کے نتیجے  میں 6 ملازمین ہلاک ہوگئے تھے۔

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل