سی  پیک قافلے پر حملے کے بعد فوج شدید خوف کا شکار ، مزید سیکورٹی طلب کرلی 

پنجگور سی پیک قافلہ سخت پاکستانی آرمی کی سیکورٹی میں حملے بعد پنجگور کی  حدود میں داخل۔یہاں آمدہ اطلاعات کے مطابق 70 ٹرالر پر مشتمل تجارتی قافلہ  سخت آرمی کی سیکورٹی میں پنجگور میں داخل ہو گیا ہے جہاں وہ رات بسر کرنے  کے بعد علی الصبح بالگتر سے ہوتے ہوئے کیچ کی حدود میں داخل ہونگے،اہم  ذرائع کے مطابق پنجگور میں سیکورٹی کو ہائی الرٹ کرنے کے بعد کیچ و ہوشاپ  اور بالگتر میں بھی سیکورٹی الرٹ کر دیا گیا ہے۔واضح رہے کہ ناگ کے مقام پر  سی پیک قافلے پر حملہ کیا گیا جس کی ذمہ داری بلوچستان لبریشن فرنٹ نے رات  گئے قبول کی۔اس حملے کے بعد پاکستانی فوج شدید خوف کا شکار ہے ۔جبکہ قافلے  میں چینی لوگ بھی شامل ہیں جوسی پیک منصوبے و تجارت سے منسلک ہیں۔پنجگور  سے اس قافلے کو تربت پہنچانے کے لیے مزید سیکورٹی دستے بھی شامل کیے جا رہے  ہیں۔واضح رہے کہ سی پیک کا انتہائی سخت روٹ پنجگور سے بالگتر اور کیچ آئے  دن آزادی پسندوں کے حملے کی زد میں ہیں،ذرائع کے مطابق کیچ سے قافلے کو سخت  سیکورٹی میں گوادر پہنچانے کی ذمہ داری کیچ آرمی کیمپ کے کرنل کو دے دی  گئی ہے۔سرکاری ذرائع کے مطابق سی پیک قافلہ علی الصبح پنجگور سے بالگتر کی  جانب راونہ ہو گا جسے زمینی فوج کی سیکورٹی کے ساتھ گن شپ ہیلی کاپٹروں کی  سیکورٹی بھی حاصل ہے۔ 

 

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل