صدر اوباما سے ملاقات، میرے لیے اعزاز کی بات: ٹرمپ


امریکہ کے نومنتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے وائٹ ہاؤس میں صدر براک اوباما سے ملاقات کے بعد کہا ہے کہ صدر اوباما سے ملاقات ان کے لیے ’اعزاز کی بات‘ تھی۔ صدر براک اوباما نے ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات کو ’شاندار‘ قرار دیا۔

اوول آفس میں ڈیڑھ گھنٹے تک جاری رہنے والی ملاقات کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے صدر اوباما نے کہا کہ ملاقات کے دوران ملکی اور غیر ملکی معاملات زیر بحث آئے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ وہ اور ان کی ٹیم مسٹر ٹرمپ کی کامیابی کے لیے ہر ممکن امداد فراہم کرے گی کیونکہ ان کی کامیابی امریکہ کی کامیابی ہے۔

اس موقع پر مسٹر ٹرمپ نے کہا کہ وہ صدر اوباما کے ساتھ مزید ملاقاتوں کے خواہشمند ہیں۔

صدر اوباما سے 90 منٹ تک جاری رہنے والی ملاقات کے بعد ڈونلڈ ٹرمپ وائٹ ہاؤس سے روانہ ہو گئے ہیں۔

بی بی سی کے نامہ نگاروں کے مطابق ایسا دکھائی دیتا ہے کہ دونوں رہنماؤں کے اپنے ذاتی اختلافات کو بالائے طاق رکھ کر خوشگوار ماحول میں ملاقات کی ہے۔

’دونوں رہنماؤں نے اپنی ٹیموں کے بنیادی معاملات پر اکٹھے کام کرنے کی بات کی ہے جبکہ مسٹر ٹرمپ نے تو مستقبل میں صدر اوباما سے مشورے لینے کا ذکر کرنا بھی مناسب سمجھا۔‘

نامہ نگاروں کے مطابق اس میں کوئی شک نہیں نہ مسٹر ٹرمپ اوباما کیئر اور ایران سے جوہری معاہدے سمیت صدر اوباما کے دور میں کیے گئے زیادہ تک اقدامات کو ختم وعدہ کیا ہے۔

اس سے پہلے ڈونلڈ ٹرمپ نیویارک سے اپنے ذاتی طیارے کے ذریعے ریگن نیشنل ایئرپورٹ پر اترے۔ ان کے ہمراہ ان کی اہلیہ میلانیا بھی ہیں جن کی خاتون اول مشیل اوباما سے ملاقات ہوئی۔

Comments

Popular posts from this blog

میں اسلم کے عہد میں جی رہا ہوں تحریر : مجیدبریگیڈ سلمان حمل